Reciter: Nadeem Sarwar

Main Zainab Hoon Lyrics In Urdu By Nadeem Sarwar

واویلا سد واویلا
شام غریباں خاک پہ کنبہ
زخمی پیروں سے چل چل کے زینب دیتی ہے پہرا
دیکھا کہ سوار آتا ہے کوئی زینب یوں تڑپ کر چلائی
اب لوٹنے کو کیا ہے باقی
آواز سوار کی یہ آئی
پہچان تیرا بابا ہوں علی
بابا سے لپٹ کر دی کے صدا
گھر اجڑ گیا میرا کچھ نہ رہا

ہائے ٹکڑے ٹکڑے دل میرا
یہ مقتل ہے میں زینب ہوں

واویلا سد واویلا

کہتی یہ خزاں آئی بابا
میں کچھ نہ بچا پائی بابا
نہ چادر نہ غازی بابا
نہ میرا رہا بھائی بابا
اللہ اللہ اللہ اللہ
گھر اجڑا ہے دل روتا ہے
ہے خون میں تر لشکر سارا

یہ مقتل ہے میں زینب ہوں
ہائے ٹکڑے ٹکڑے دل میرا
یہ مقتل ہے میں زینب ہوں

واویلا سد واویلا

میں بہن اٹھارہ ویراں دی
پردیس اچ بابا اجڑ گئی
درداں دی ماری دھی تیری
ہے ماتم دار بہَتر دی
اللہ اللہ اللہ اللہ
میں کوں دے پرسہ مقتولاں دا
اجڑی کوں گل نال لا بابا

یہ مقتل ہے میں زینب ہوں
ہائے ٹکڑے ٹکڑے دل میرا
یہ مقتل ہے میں زینب ہوں

واویلا سد واویلا

عاشور کا دن ایسا گزرا
آباد چمن برباد ہوا
پیاسا تنہا بھائی تیرا
پیاروں کے لاشے لاتا رہا
اللہ اللہ اللہ اللہ
کئی بار گرا گر گر کے اٹھا
مظلوم غریب کربوبلا

یہ مقتل ہے میں زینب ہوں
ہائے ٹکڑے ٹکڑے دل میرا
یہ مقتل ہے میں زینب ہوں

واویلا سد واویلا

جدوں غاذزی جھنڑیا گھوڑے تو
مینڈے مک گئے مان بھراواں تے
تیری شرماں والی زینب نوں
نہیں بھلنے درد رداواں دے
اللہ اللہ اللہ اللہ
بابا بابا میں کوں ٹرن سکھا
میں ونجنا اے شام نوں رسیاں پا

یی مقتل ہے میں زینب ہوں
ہائے ٹکڑے ٹکڑے دل میرا
یہ مقتل ہے میں زینب ہوں

واویلا سد واویلا

پردیس اللہ راہسی تے
نہیں کیتا ترس ذرا بابا
نہ مارو واسطے دیندی رہی
قرآن کوں ڈر تے چا بابا
اللہ اللہ اللہ اللہ
نہیں بس چلیا کوئی اجڑی دا
میرا ویر لعیناں مار دتا

یہ مقتل ہے میں زینب ہوں
ہائے ٹکڑے ٹکڑے دل میرا
یہ مقتل ہے میں زینب ہوں

واویلا سد واویلا

اب خاک پہ ہے کنبہ سارا
یہ شما غریباں ہے بابا
خیمے بھی جلے اسباب لٹا
کوئی نہ رہا عابد کے سوا
اللہ اللہ اللہ اللہ
وہاں جشن بپا یہاں آہ و بکا
یہ شام ہے شام عاشورہ

یہ مقتل ہے میں زینب ہوں
ہائے ٹکڑے ٹکڑے دل میرا
یہ مقتل ہے میں زینب ہوں

واویلا سد واویلا

نہ رو زینب یہ بولے علی
آ سینے سے لگ جا بیٹی
کر حوصلہ میری شہزادی
ابھی شام کی منزل ہے باقی
اللہ اللہ اللہ اللہ
بولی دکھیا تم کرنا دعا
کرنا ہے سفر بازاروں کا

یہ مقتل ہے میں زینب ہوں
ہائے ٹکڑے ٹکڑے دل میرا
یہ مقتل ہے میں زینب ہوں

واویلا سد واویلا

Join Khairilamal on WhatsApp

WhatsApp

Leave a Reply