Reciter: Ahmed Raza Nasiri

Mera Mazloom Hussain Lyrics In Urdu By Ahmed Raza Nasiri

مقتل میں اک لاش پہ اک ماں ہے نوحہ گر
کتنا غریب ہو گیا یا رب میرا پسر

بکھرا ہوا ہے دشت میں بے حال خوں میں تر
سینہ کہیں ہے ہاتھ کہیں اور کہیں ہے سر

مظلوم یہ غریب میرے دل کا چین ہے
میں فاطمہ ہوں اور یہ میرا حسین ہے

ہائے مظلوم حسین میرا مظلوم حسین

دستور تھا یہ آج سے پہلے میرے خدا
میت کسی کی ہو تو سب آتے ہیں اقربا
دیتے ہیں لوگ اہل جنازہ کو حوصلہ
آتا ہے پھر نماز جنازہ کا مرحلہ
لیکن میرا حسین یہ کتنا غریب ہے
غسل و کفن نہ لاش کو تربت نصیب ہے

ہائے مظلوم حسین میرا مظلوم حسین

کیا یہ ہے احترام شاہ مشرقین کا
کیسا یہ احتمام ہے میت کی زین کا
تیغ و تبر نے پڑٹ کے جنازہ حسین کا
کیا حال کر دیا ہے میرے نور عین کا
سوکھی رگوں کو ظلم سے مربوط کر دیا
تیروں کو میرے لعل کا تابوت کر دیا

ہائے مظلوم حسین میرا مظلوم حسین

روتی ہیں میتوں پہ بہن مائیں بیٹیاں
دیتے ہیں لوگ ان کو دلاسہ تسلیاں
میں بھی تو ایک ماں ہوں مجھے کیوں نہیں اماں
یہ لاشہ حسین ہے دیکھے کوئی یہاں
رونے کے لئے آہ و بکا چھین لی گئی
میری تو بیٹیوں کی ردا چھین لی گئی

ہائے مظلوم حسین میرا مظلوم حسین

ایسے نہ اس جہاں سے کوئی جدا ہوا
آئی نہیں ہے ایسے کسی کو کبھی قضا
مقتل میں بار بار گرا اور پھر اٹھا
خنجر چلا توا خشک تھا شبیر کا گلہ
نوحہ سناؤں اور میں کیا کیا حسین کے
نالہ کناں ہیں خاک پہ اعضا حسین کے

ہائے مظلوم حسین میرا مظلوم حسین

تڑپا بہت یا رن میں بہتر کی لاش پر
خم تھا کمر میں اپنے برادر کی لاش پر
شل ہاتھ ہو گئے علی اصغر کی لاش پر
دنیا سے جا چکا تھا یہ اکبر کی لاش پر
اس کی طرح بتاؤ تو جاں سے کوئی گیا
کیا ایسے بار بار جہاں سے کوئی گیا

ہائے مظلوم حسین میرا مظلوم حسین

یاسر بکا حسین میری میں بکا میں ہوں
قائم کی انتظار کی ہر التجا میں ہوں
صدیاں گزر گئی ہیں مگر میں عزا میں ہوں
اپنی لحد کو چھوڑ کے میں کربلا میں ہوں
میں ماں ہوں کس طرح سے رہوں میں سکون میں
میرا حسین آج بھی غلطاں ہے خون میں

ہائے مظلوم حسین میرا مظلوم حسین

Maqtal Mein Aik Lash Pay Ek Maan Hai Noha Gar
Kitna Ghareeb Ho Gaya Ya Rab Mera Pisar

Bikhra Hua Hai Dasht Mein Bey Haal Khoon Mein Tarr
Seena Kahin Hai Hath Kahin Aur Kahin Hai Sar

Mazloom Yeh Ghareeb Meray Dill Ka Chain Hai
Main Fatima Hun Aur Yeh Mera Hussain Hai

Haye Mazloom Hussain Mera Mazloom Hussain

Dastoor Tha Yeh Aaj Say Pehlay Meray Khuda
Maiyat Kisi Ki Ho To Sab Atay Hain Aqraba
Detay Hain Log Ahl E Janaza Ko Hosla
Ata Hai Phir Namaz E Janaza Ka Marhala
Lekin Mera Hussain Yeh Kitna Ghareeb Hai
Ghusl O Kafan Na Lash Ko Turbat Naseeb Hai

Haye Mazloom Hussain Mera Mazloom Hussain

Kya Yeh Hai Ehtram Shah E Mashraqain Ka
Kaisa Yeh Ehtamam Hai Maiyat Ki Zayn Ka
Taigh O Tabar Nay Parh Kay Janaza Hussain Ka
Kya Hal Kar Diya Hai Meray Noor E Ain Ka
Sookhi Ragon Ko Zulm Say Marboot Kar Diya
Teeron Ko Meray Laal Ka Taboot Kar Diya

Haye Mazloom Hussain Mera Mazloom Hussain

Roti Hain Maiyaton Pay Behan Maayen Betiyan
Detay Hain Log Un Ko Dilasa Tasalliyan
Main Bhi To Aik Maan Hun Mujhay Kiun Nahi Amaan
Yeh Lasha E Hussain Hai Daikhay Koi Yahan
Ronay Kay Liye Aah O Buka Cheen Li Gai
Meri To Betiyon Ki Rida Cheen Li Gai

Haye Mazloom Hussain Mera Mazloom Hussain

Aisay Na Is Jahan Say Koi Juda Hua
Aai Nahi Hai Aisay Kisi Ko Kabhi Qaza
Maqtal Mein Bar Bar Gira Aur Phir Utha
Khanjar Chala To Khushk Tha Shabbir Ka Gala
Nohay Sunaun Aur Main Kya Kya Hussain Kay
Nala Kunaan Hain Khak Pay Ahzaa Hussain Kay

Haye Mazloom Hussain Mera Mazloom Hussain

Tarhpa Bahut Yeh Ran Mein Bahattar Ki Lash Par
Kham Tha Kamar Mein Apnay Baradar Ki Lash Par
Shal Hath Ho Gaye Ali Asghar Ki Lash Par
Duniya Say Ja Chuka Tha Yeh Akbar Ki Lash Par
Is Ki Tarah Batao To Jaan Say Koi Gaya
Kya Aisay Bar Bar Jahan Say Koi Gaya

Haye Mazloom Hussain Mera Mazloom Hussain

Yasir Buka Hussain Meri Main Buka Mein Hun
Qayem Kay Intezar Ki Har Iltija Mein Hun
Sadiyan Guzar Gai Hain Magar Main Aza Mein Hun
Apni Lahad Ko Chorh Kay Main Karbala Mein Hun
Main Maan Hun Kis Tarah Say Rahun Main Sukoon Mein
Mera Hussain Aaj Bhi Ghaltan Hai Khoon Mein

Haye Mazloom Hussain Mera Mazloom Hussain

Join Khairilamal on WhatsApp

WhatsApp

Leave a Reply