Haye Jan Ali Akbar Lyrics Ali Jee Noha

Urdu Noha Haye Jan Ali Akbar Lyrics in English and Urdu recited by Ali Jee. Find out more noha lyrics by Ali Jee similar to lyrics of Haye Jan Ali Akbar on Khairilamal.

Haye Jan Ali Akbar Lyrics in English

Shabih E Payambar Haye Haye Ali Akbar
Kaisy Jiye Gi Tery Bin Haye Yeh Madar
Haye Jaan Ali Akbar

Beta Ali Akbar Madar Ko Pukaro
Gham Zada Madar Ko Chehra To Dikha Do
Khak Sy Utho Mujh Ko Bula Lo
Ary Maah E Pareshan Kahan Ho Mery Dilbar

Shabih E Payambar Haye Haye Ali Akbar
Kaisy Jiye Gi Tery Bin Haye Yeh Madar
Haye Jaan Ali Akbar

Qaid Hui Beta Zindaan Chali Maan
Ary Sary Shaheedon Ka Allah Nigehbaan
Ghar Hua Weeran, Aao Meri Jaan
Ary Ho Gya Sajjad Akela Mera Dilbar

Shabih E Payambar Haye Haye Ali Akbar
Kaisy Jiye Gi Tery Bin Haye Yeh Madar
Haye Jaan Ali Akbar

Maan Ka Yeh Armaan Tha Tujhy Dulha Banati
Ary Maan Teri Dulhan Ko Naazon Sy Sajati
Ho Nahi Paai Aas Yeh Poori
Ary Aisy Gaye Aaye Na Maidan Sy Palat Kar

Shabih E Payambar Haye Haye Ali Akbar
Kaisy Jiye Gi Tery Bin Haye Yeh Madar
Haye Jaan Ali Akbar

Maan Hai Rasan Basta Sar Tera Sinaan Par
Ary …… E Aahda Mein Laya Hai Muqaddar
Ay Mery Piyaray Nok E Sinaan Sy
Ary Dekh Ly Maan Teri Hai ….. Mein Khuly Sir

Shabih E Payambar Haye Haye Ali Akbar
Kaisy Jiye Gi Tery Bin Haye Yeh Madar
Haye Jaan Ali Akbar

Beta Ali Akbar Madar Ka Hai Waada
Ary Soag Manaun Gi Ta Umar Tumhara
Ab Na Piyun Gi Thanda Main Paani
Ary Ab Na Main Baithun Gi Saaye Mein Ja Kar

Shabih E Payambar Haye Haye Ali Akbar
Kaisy Jiye Gi Tery Bin Haye Yeh Madar
Haye Jaan Ali Akbar

Pooch Liya Mujh Sy Sughra Ny Jo Tera
Ary Kaisy Bataun Gi Akbar Nahi Aaya
Roye Gi Sughra Tarhphy Gi Sughra
Ary Tery Bina Kaisy Jiye Gi Teri Khuahar?

Shabih E Payambar Haye Haye Ali Akbar
Kaisy Jiye Gi Tery Bin Haye Yeh Madar
Haye Jaan Ali Akbar

Haye Jan Ali Akbar Lyrics in Urdu

شبیہہ پیمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر؟
ائے جان علی اکبر

بیٹا علی اکبر مادر کو پکارو
غم زدہ مادر کو چہرہ تو دکھا دو
خاک سے اٹھو مجھ کو بلا لو
ارے ماہ پریشان کہاں ہو میرے دلبر

شبیہہ پیمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر؟
ائے جان علی اکبر

قید ہوئی بیٹا زندان چلی ماں
ارے سارے شہیدوں کا اللہ نگہبان
گھر ہوا ویران، آو میری جان
ارے ہو گیا سجاد اکیلا میرا دلبر

شبیہہ پیمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر؟
ائے جان علی اکبر

ماں کا یہ ارماں تھا تجھے دلہہ بناتی
ارے ماں تیری دلہن کو نازوں سے سجاتی
ہو نہیں پائی آس یہ پوری
ارے ایسے گئے آئے نہ میداں سے پلٹ کر

شبیہہ پیمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر؟
ائے جان علی اکبر

ماں ہے رسن بستہ سر تیرا سناں پر
ارے ۔۔۔۔۔ اعدا میں لایا ہے مقدر
اے میرے پیارے نوک سناں سے
ارے دیکھ لے ماں تیری ہے ۔۔۔۔ میں کھلے سر

شبیہہ پیمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر؟
ائے جان علی اکبر

بیٹا علی اکبر مادر کا ہے وعدہ
ارے سوگ مناوں گی تا عمر تمھارا
اب نہ پیوں گی ٹھنڈا میں پانی
ارے اب نہ میں بیٹھوں گی سائے میں جا کر

شبیہہ پیمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر؟
ائے جان علی اکبر

پوچھ لیا مجھ سے صغرا نے جو تیرا
ارے کیسے بتاوں گی اکبر نہیں آیا
روئے گی صغرا، تڑپے گی صغرا
ارے تیرے بنا کیسے جئے گی تیری خواہر؟

شبیہہ پیمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر؟
ائے جان علی اکبر

Leave a Reply

Your email address will not be published.