Reciter: Shahid Baltistani

نبی نبی۔۔۔۔

جہانِ حُسن سے یہ انقلاب ہو نا سکا
محمدِ عَرَبی کا جواب ہو نا سکا

پڑھا کے غیب سے بھیجا ہے میرے آقا کو
بجز نبی کوئی اُمی خطاب ہونا سکا

خدا سے دُور ہے اور وہ خودی سے ناواقف
در ِ رسول جسے دستیاب ہونا سکا

عرق جبین سے لے کر نبی بنائے گئے
پھر اُس کے بعد پسینہ گُلاب ہونا سکا

کرم نگاہیِ آقا ہیں بوذر و سلماں
وہ ذرہ کیا جو یہاں آفتاب ہونا سکا

حقیقتاً ابو طالب کے لاڈلے کے سوا
کوئی بھی مثلِ رسالت مآب ہو نا سکا

گناہ گار ہے رحمت کی بس تلاش میں ہے
ہمارا عاصیؔ بھی یوں بازیاب ہو نا سکا

Join Khairilamal on WhatsApp

WhatsApp

Leave a Reply