Reciter: Ahmed Raza Nasiri

Sajjad Na Tera Bhai Raha Lyrics In Urdu By Ahmed Raza Nasiri

ہائے

چلے ہیں رخصت آخر کو سید والا
ہے غش میں عابد مضطر حسین ہیں تنہا
اٹھے جو غش سے تو دیکھا حسین کا چہرہ
ہے چور زخموں سے شبیر کا بدن سارا
یہ پوچھا اکبر و عباس ہیں کہاں بابا
حسین روتے رہے اور صرف اتنا کہا

سجاد نہ تیرا بھائی رہا سجاد نہ میرا بھائی رہا

سناں کلیجے پہ کھائی ہے تیرے بھائی نے
ہیں دونوں ہاتھ جدا رن میں میرے بھائی کے
ستم یہ ہے میرا اصغر بھی مر گیا پیاسا

سجاد نہ تیرا بھائی رہا سجاد نہ میرا بھائی رہا

وہ میرے نانا کی تصویر وہ میرا اکبر
میں جس کو دیکھ کے جیتا تھا وہ میرا دلبر
اٹھا کے کاندھوں پہ لایا ہوں اس کا میں لاشہ

سجاد نہ تیرا بھائی رہا سجاد نہ میرا بھائی رہا

وہ میرا زور کمر ہائے وہ میرا عباس
وہ حوصلہ تھا میرا اور بی بیوں کی آس
کمر میں خم ہے اسی کے بچھڑنے کا بیٹا

سجاد نہ تیرا بھائی رہا سجاد نہ میرا بھائی رہا

کہا یہ سید سجاد نے میرے بابا
دو اذن مجھ کو کروں جاں میں اپنی تم پہ فدا
کلیجہ پھٹتا ہے سن کر تمھارا یہ نوحہ

سجاد نہ تیرا بھائی رہا سجاد نہ میرا بھائی رہا

حسین بولے سہے دل پہ میں نے یہ صدمے
اٹھائے عون و محمد حبیب کے لاشے
ہوئے ہیں قاسم نو شاہ مجھ پہ حر بھی فدا

سجاد نہ تیرا بھائی رہا سجاد نہ میرا بھائی رہا

یہ سن کے دیر تلک روئے سید سجاد
یہ مرثیہ تھا لبوں پر ہوئے ہیں ہم برباد
لہو رلاتا ہے بابا یہ آپ کا کہنا

سجاد نہ تیرا بھائی رہا سجاد نہ میرا بھائی رہا

حسین جاتے ہیں سجاد اب خدا حافظ
حرم تمھارے حوالے ہیں رب تیرا حافظ
رضائے رب ہے یہ رن میں اب میرا جانا

سجاد نہ تیرا بھائی رہا سجاد نہ میرا بھائی رہا

حسین رن میں ہیں زخموں سے چور چور بہت
نہ کوئی ناصر و یاور وطن ہے دور بہت
ظہور شہہ نے کہا جی کے اب کروں میں کیا

سجاد نہ تیرا بھائی رہا سجاد نہ میرا بھائی رہا

Haye

Chalay Hain Rukhsat E Akhir Ko Sayed E Wala
Hai Ghash Mein Abid E Muztar Hussain Hain Tanha
Uthay Jo Ghash Say To Daikha Hussain Ka Chehra
Hai Choor Zakhmon Say Shabbir Ka Badan Sara
Yeh Poocha Akbar O Abbas Hain Kahan Baba
Hussain Rotay Rahay Aur Sirf Itna Kaha

Sajjad Na Tera Bhai Raha Sajjad Na Mera Bhai Raha

Sinaan Kalaijay Pay Khai Hai Teray Bhai Nay
Hain Dono Hath Juda Ran Mein Meray Bhai Kay
Sitam Yeh Hai Mera Asghar Bhi Mar Gaya Pyasa

Sajjad Na Tera Bhai Raha Sajjad Na Mera Bhai Raha

Woh Meray Nana Ki Tasveer Woh Mera Akbar
Main Jis Ko Daikh Kay Jeeta Tha Woh Mera Dilbar
Utha Kay Kaandhon Pay Laya Hun Us Ka Main Lasha

Sajjad Na Tera Bhai Raha Sajjad Na Mera Bhai Raha

Woh Mera Zor E Kamar Haye Woh Mera Abbas
Woh Hosla Tha Mera Aur Bibiyon Ki Aas
Kamar Mein Kham Hai Usi Kay Bicharnay Ka Beta

Sajjad Na Tera Bhai Raha Sajjad Na Mera Bhai Raha

Kaha Yeh Sayed E Sajjad Nay Meray Baba
Do Izn Mujh Ko Karun Jaan Main Apni Tum Pay Fida
Kalaija Phat’ta Hai Sun Kar Tumhara Yeh Noha

Sajjad Na Tera Bhai Raha Sajjad Na Mera Bhai Raha

Hussain Bolay Sahay Mainay Dill Pay Yeh Sadmay
Uthaye Aon O Muhammad Habib Kay Lashay
Huye Hain Qasim E No Shah Mujh Pay Hurr Bhi Fida

Sajjad Na Tera Bhai Raha Sajjad Na Mera Bhai Raha

Yeh Sun Ky Dair Talak Roye Sayed E Sajjad
Yeh Marsiya Tha Labonpar Huye Hain Hum Barbaad
Lahu Rulata Hai Baba Yeh Aap Ka Kehna

Sajjad Na Tera Bhai Raha Sajjad Na Mera Bhai Raha

Hussain Jatay Hain Sajjad Ab Khuda Hafiz
Haram Tumharay Hawalay Hain Rabb Tera Hafiz
Raza E Rabb Hai Yehi Ran Mein Ab Mera Jana

Sajjad Na Tera Bhai Raha Sajjad Na Mera Bhai Raha

Hussain Ran Mein Hain Zakhmon Say Choor Choor Bahut
Na Koi Nasir O Yawar Watan Hai Door Bahut
Zahoor Sheh Nay Kaha Jee Kay Ab Karun Main Kya

Sajjad Na Tera Bhai Raha Sajjad Na Mera Bhai Raha

Join Khairilamal on WhatsApp

WhatsApp

Leave a Reply