Reciter: Ali Safdar

Ya Fatima Hassan Ke Janaze Lyrics In Urdu By Ali Safdar

لاش حسن پے کیسے نہ آنسو بہائیئے
قبر رسول کہتی ہے ماں کو بلائیے

یا فاطمہ حسن کے جنازے پے آئیے

قبر رسول کہتی ہے ماں کو بلائیے

یا فاطمہ حسن کے جنازے پے آئیے

کیسی بنائی زہر نے صورت کو دیکھئے
ٹکڑے جگر تمام قیامت کو دیکھئے
آئی ہے نیند گود میں اپنی سلائیے

یا فاطمہ حسن کے جنازے پے آئیے

پہلوئے مصطفی میں پسر کی جگہ نہیں
جیسے یہ چشم و جان و دل مصطفی نہیں
حاسد یہ کہہ رہے ہیں جنازہ اٹھائیے

یا فاطمہ حسن کے جنازے پے آئیے

افسردہ ہے نجف تو مدینہ اداس ہے
فروہ یہ پوچھتی ہیں یہ کیسا لباس ہے
اس طرح سب کو چھوڑ کے مولا نہ جائیے

یا فاطمہ حسن کے جنازے پے آئیے

کیا کیا جفائیں دل پے اٹھا کر چلے گئے
شبیر بے قرار ہیں شبر چلے گئے
آئیں گے پھر نہ لوٹ کے جتنا بلائیے

یا فاطمہ حسن کے جنازے پے آئیے

ابن حسن کو رنج و بلا سے نکالئے
بچھڑا ہے پہلی بار پدر رو سنبھالئے
کربوبلا یتیم حسن کو دکھائیے

یا فاطمہ حسن کے جنازے پے آئیے

آل نبی کی خاک اڑانے کا روز ہے
سر پیٹنے کا اشک بہانے کا روز ہے
بین و بکا سے عرش کا پایا ہلائیے

یا فاطمہ حسن کے جنازے پے آئیے

لاش حسن پے تیروں کو برسا رہے ہیں کون
اللہ کے حبیب کو تڑپا رہے ہیں کون
چہروں سے کلمہ گویوں کے پردہ ہٹائیے

یا فاطمہ حسن کے جنازے پے آئیے

گزری ہے کیا امام حسن پر نہ پوچھئے
کتنے لگے ہیں تیر کفن پر نہ پوچھئے
آنسو تھمیں حنا تو یہ قصہ سنائیے

یا فاطمہ حسن کے جنازے پے آئیے

Lash E Hasan Pay Kaisay Na Aansoo Bahaiye
Qabr E Rasool Kehti Hai Maan Ko Bulailye

Ya Fatima Hassan Ka Janaze Pe Aaiye

Qabr E Rasool Kehti Hai Maan Ko Bulaiye

Ya Fatima Hassan Ke Janaze Pe Aaiye

Kaisi Banai Zehr Nay Soorat To Daikhiye
Tukrhay Jigar Tamam Qayamat To Daikhiye
Aai Hai Neend Goud Mein Apni Sulaiye

Ya Fatima Hassan Ke Janaze Pe Aaiye

Pehloo E Mustafa Mein Pisar Ki Jaga Nahi
Jaisay Yeh Chashm O Jan O Dil E Mustafa Nahi
Haasid Yeh Keh Rahay Hain Janaza Hataiye

Ya Fatima Hassan Ke Janaze Pe Aaiye

Afsurda Hai Najaf To Madina Udaas Hai
Farwa Yeh Poochti Hain Yeh Kaisa Libas Hai
Is Tarah Sab Ko Chorh Kay Mola Na Jaiye

Ya Fatima Hassan Ke Janaze Pe Aaiye

Kya Kya Jafayen Dill Pay Utha Kar Chalay Gaye
Shabbir Bey Qarar Hain Shabbar Chalay Gaye
Aayen Gay Phir Na Laot Kay Jitna Bulaiye

Ya Fatima Hassan Ke Janaze Pe Aaiye

Ibn E Hasan Ko Ranj O Bala Say Nikaliye
Bichrha Hai Pehli Bar Padar Say Sambhaliye
Karbobala Yateem E Hasan Ko Dikhaiye

Ya Fatima Hassan Ke Janaze Pe Aaiye

Aal E Nabi Ki Khak Urhanay Ka Roz Hai
Sar Peetnay Ka Ashk Bahanay Ka Roz Hai
Bayn O Buka Say Arsh Ka Paya Hilaiye

Ya Fatima Hassan Ke Janaze Pe Aaiye

Lash E Hasan Pay Teeron Ko Barsa Rahay Hain Kon
Allah Kay Habib Ko Tarhpa Rahay Hain Kon
Chehron Say Kalma Goyon Kay Parda Hataiye

Ya Fatima Hassan Ke Janaze Pe Aaiye

Guzri Hai Kya Imam E Hasan Par Na Poochiye
Kitnay Lagay Hain Teer Kafan Par Na Poochiye
Aansoo Thamen Hina To Yeh Qissa Sunaiye

Ya Fatima Hassan Ke Janaze Pe Aaiye

Join Khairilamal on WhatsApp

WhatsApp

Leave a Reply