Reciter: Mir Hasan Mir

Yeh Ghurbat E Ali Hai Lyrics In Urdu By Mir Hasan Mir

ہاۓ علی ہاۓ زھرا

پہلو بھی شکستہ ہے اور قبر بھی ٹوٹی ہے
زھرا کی غریبی ہی علی کی غریبی ہے

یہ غربتِ علی ہے یہ غربت علی ہے

حق مانگنے جو زھرا دربار میں گی ہے
یہ غربتِ علی ہے
یہ غربت علی ہے

آواز آ رہی ہے میں بنتِ مصطفیٰ ہوں
بابا کے کلمہ گویؤں میں ہی تو فاطمہ ہوں
پہچاننے سے دُنیا انکار کر رہی ہے

یہ غربتِ علی ہے
یہ غربت علی ہے

سن کر سلامِ حیدر کوئی نہیں ہے روکتا
واجب نہیں سمجھتا کوئی جواب دینا
افسوس فاطمہ بھی یہ بات جانتی ہے

یہ غربتِ علی ہے
یہ غربت علی ہے

مسجد میں سر جکھائے مولا کھڑے ہوئے ہیں
حاکم کی تہمتوں کو چپ چاپ سن رہے ہیں
صدیقہ سب کے آگے جھٹلائی جا رہی ہیں

یہ غربتِ علی ہے
یہ غربت علی ہے

کہتی ہے رو کے زھرا جانے نہ دوں گی تنہا
پٹکے میں مرتضیٰ کے ہے ہاتھ سیدہ کا
اب ہے کسی کا دُرا اور دخترِ نبی ہے

یہ غربتِ علی ہے
یہ غربت علی ہے

اک کوچ میں پہنچ کر دیکھا ہے مجتبیٰ نے
ظلم نے ضرب ماری کیسے خدا ہی جانے
بنتِ نبی زمین پر غش کھا کے گر پڑی ہے

یہ غربتِ علی ہے
یہ غربت علی ہے

مظلومِ کربلا کو یاد آگئی سکینہ
بیٹی پہ مصطفیٰ کی کُن فز کا ہاتھ اُٹھا
پہلو میں مرتضیٰ کی تلوار رو پڑی ہے

یہ غربتِ علی ہے
یہ غربت علی ہے

پہلو بھی شکستہ ہے ہاتھوں پہ بھی ہیں چھالے
ہے آپ کی اُمت اب آپ کے حوالے
یہ کہ کے مرتضیٰ نےمیت نبی کو دی ہے

یہ غربتِ علی ہے
یہ غربت علی ہے

کافی ہے بس یہ فقرہ رونے کو زندگی بھر
ہاتھوں کو اپنے اکثر کہتےتھے مل کے حیدر
خیبر شکن کی زوجہ گُھٹ گُھٹ کر مر گی ہے

یہ غربتِ علی ہے
یہ غربت علی ہے

کیسے لکھے تکلم غربت علی ولی کی
زوجہ صابیوں کے دربار میں گی تھی
بیٹی شرابیوں کے دربار میں گی تھی

یہ غربتِ علی ہے
یہ غربت علی ہے

Haye Ali Haye Zahra

Pehloo Bhi Shikasta Hai Aur Qabr Bhi Tooti Hai
Zahra Ki Ghareebi Hi Haider Ki Ghareebi Hai

Yeh Ghurbat E Ali Hai Yeh Ghurbat E Ali Hai

Haq Mangny Jo Zahra Darbar Mein Gai Hai
Yeh Ghurbat E Ali Hai

Yeh Ghurbat E Ali Hai

Awaz Aa Rahi Hai Main Bint E Mustafa Hun
Baba Ky Kalma Goyo Main Hi To Fatima Hun
Pehchan’ny Sy Duniya Inkar Kar Rahi Hai
Yeh Ghurbat E Ali Hai

Yeh Ghurbat E Ali Hai

Sun Kar Salam E Haider Koi Nahi Hai Rukta
Wajib Nahi Samajhta Koi Jawab Dena
Afsos Fatima Bhi Yeh Baat Janti Hai
Yeh Ghurbat E Ali Hai

Yeh Ghurbat E Ali Hai

Masjid Mein Sar Jhukaye Mola Kharhy Huye Hain
Hakim Ki Tohmaton Ko Chup Chap Sun Rahy Hain
Siddeeqa Sab Ky Aagy Jhutlai Ja Rahi Hai
Yeh Ghurbat E Ali Hai

Yeh Ghurbat E Ali Hai

Kehti Hai Ro Ky Zahra Jany Na Dun Gi Tanha
Patky Mein Murtaza Ky Hai Hath Sayeda Ka
Ab Hai Kisi Ka Durra Aur Dukhtar E Nabi Hai
Yeh Ghurbat E Ali Hai

Yeh Ghurbat E Ali Hai

Ek Koochy Mein Pahunch Kar Dekha Hai Mujtaba Ny
Zalim Ny Zarb Mari Kaisy Khuda Hi Jany
Binte Nabi Zameen Par Ghash Kha Ky Gir Parhi Hai
Yeh Ghurbat E Ali Hai

Yeh Ghurbat E Ali Hai

Mazloom E Karbala Ko Yad Aa Gai Sakina
Beti Py Mustafa Ki Kunfuz Ka Hath Utha
Pehloo Mein Murtaza Ki Talwar Ro Parhi Hai
Yeh Ghurbat E Ali Hai

Yeh Ghurbat E Ali Hai

Pehloo Bhi Hai Shikasta Hathon Py Bhi Hain Chaaly
Hai Aap Ki Amanat Ab Aap Ky Hawalay
Yeh Keh Ky Murtaza Ny Mayyat Nabi Ko Di Hai
Yeh Ghurbat E Ali Hai

Yeh Ghurbat E Ali Hai

Kafi Hai Bas Yeh Fiqra Rony Ko Zindagi Bhar
Hathon Ko Apny Aksar Kehty Thy Mall Ky Haider
Khaibar Shikan Ki Zoja Ghut Ghut Ky Mar Gai Hai
Yeh Ghurbat E Ali Hai

Yeh Ghurbat E Ali Hai

Kaisy Likhy Takallum Ghurbat Ali Wali Ki
Zoja Sahabion Ky Darbar Mein Gai Thi
Beti Sharabion Ky Darbar Mein Gai Hai
Yeh Ghurbat E Ali Hai

Yeh Ghurbat E Ali Hai

Join Khairilamal on WhatsApp

WhatsApp

Leave a Reply