Reciter: Mir Hasan Mir

Akbar Kay Janazay Pay Lyrics In Urdu By Mir Hasan Mir

اکبر ہائے ہائے اکبر

ہائے

ہائے جس وقت گرا زین سے ہم شکل پیمبر
شبیر کو زینب نے صدا دی یہ تڑپ کر
اکبر

اکبر کے جنازے پہ مجھے لے چلو بھیا

ہم مل کے اٹھا لیں گے جواں لعل کا لاشہ

اکبر کے جنازے پہ مجھے لے چلو بھیا

اٹھارہ برس والے کا سر گود میں لے کر
میں ناد علی پڑھتی رہوں گی اے برادر
تم سینہ اکبر سے نکالو گے جو نیزہ
اکبر
اکبر کے جنازے پہ مجھے لے چلو بھیا

جو زخم لگے ہیں وہ دکھائے گا نہ تم کو
شاید وہ تکلف میں بتائے گا نہ تم کو
میں ماں ہوں مگر مجھ سے چھپا ہی نہیں سکتا

اکبر کے جنازے پہ مجھے لے چلو بھیا

میں جانتی ہوں کیسے جواں ہوتے ہیں بیٹے
اور دیکھنے پڑ جائیں اگر ان کے جنازے
اب میں بھی سمجھ سکتی ہوں اولاد کا صدمہ

اکبر کے جنازے پہ مجھے لے چلو بھیا

آنے نہیں دوں گی میں کسی کو بھی وطن پر
جی بھر کے گلے ملنا جواں لعل سے جا کر
میں موت سے کہہ دوں گی ذرا دیر ٹھہر جا

اکبر کے جنازے پہ مجھے لے چلو بھیا

بابا میرے بابا کی صدا دے تو رہا ہے
آواز سے لگتا ہے بہت دور گرا ہے
لو ہاتھ میرا تھامو بہت دھول ہے جاناں

اکبر کے جنازے پہ مجھے لے چلو بھیا

ہائے اکبر

اس کرب کی حالت سے نکالے گا تمھیں کون
وہ ایڑیاں رگڑے گا سنبھالے گا تمھیں کون
چادر سے بنا لوں گی میں کچھ دیر کو پردہ

اکبر کے جنازے پہ مجھے لے چلو بھیا

ٹوٹی سے کمر آپ کی اے میرے برادر
گر گر کے اٹھیں گے تو ہنسیں گے یہ ستم گر
میں آپ کو بننے کو نہیں دوں گی تماشہ

اکبر کے جنازے پہ مجھے لے چلو بھیا

روتی ہے کوئی بی بی مسلسل پس پردہ
جب سے ہے سنا میر تکلم تیرا نوحہ
بھائی سے گلے مل کے بہن بولی دوبارہ

اکبر کے جنازے پہ مجھے لے چلو بھیا

اکبر ہائے ہائے اکبر

Akbar Haye Haye Akbar

Haye

Haye Jis Waqt Gira Zeen Say Hamshakal E Payambar
Shabbir Ko Zainab Nay Sada Di Yeh Tarhap Kar
Akbar

Akbar Kay Janazay Pay Mujhay Lay Chalo Bhaiya

Hum Mil Ky Utha Len Gay Jawan Laal Ka Lasha

Akbar Kay Janazay Pay Mujhay Lay Chalo Bhaiya

Atthara Baras Walay Ka Sar Goud Mein Lay Kar
Main Naad E Ali Parhti Rahun Gi Ay Baradar
Tum Seena E Akbar Sy Nikalo Gay Jo Naiza
Akbar
Akbar Kay Janazay Pay Mujhay Lay Chalo Bhaiya

Jo Zakhm Lagay Hain Woh Dikhaye Ga Na Tum Ko
Shayad Woh Takalluf Mein Bataye Ga Na Tum Ko
Main Maan Hun Magar Mujh Sy Chupa Hi Nahi Sakta

Akbar Kay Janazay Pay Mujhay Lay Chalo Bhaiya

Main Jaanti Hun Kaisay Jawan Hotay Hain Betay
Aur Dekhnay Parh Jayen Agar Un Kay Janazay
Ab Main Bhi Samajh Sakti Hun Aulaad Ka Sadma

Akbar K Janazy Py Mujhy Ly Chalo Bhaiya

Anay Nahi Dun Gi Main Kisi Ko Bhi Wahan Par
Jee Bhar Ky Galay Milna Jawan Laal Say Ja Kar
Main Maot Say Keh Dun Gi Zara Dair Thehar Ja

Akbar Kay Janazay Pay Mujhay Lay Chalo Bhaiya

Baba Meray Baba Ki Sada Dey To Raha Hai
Awaz Say Lagta Hai Bahut Door Gira Hai
Lo Hath Mera Thaamo Bahut Dhool Hai Jaanan

Akbar Kay Janazay Pay Mujhay Lay Chalo Bhaiya

Haye Akbar

Us Karb Ki Halat Say Nikaalay Ga Tumhen Kon
Woh Airhian Ragrhay Ga Sambhalay Ga Tumhen Kon
Chadar Say Bana Lun Gi Main Kuch Dair Ko Parda

Akbar Kay Janazay Pay Mujhay Lay Chalo Bhaiya

Tooti Hai Kamar Aap Ki Ay Meray Baradar
Gir Gir Kay Uthen Gay To Hansen Gay Yeh Sitamgar
Main Aap Ko Ban’nay Ko Nahi Dun Gi Tamasha

Akbar Kay Janazay Pay Mujhay Lay Chalo Bhaiya

Roti Hai Koi Bibi Musalsal Pas E Parda
Jab Sy Hai Suna Mir Takallum Tera Noha
Bhai Say Galay Mil Kay Behan Boli Dobara

Akbar Kay Janazay Pay Mujhay Lay Chalo Bhaiya

Akbar Haye Haye Akbar

Join Khairilamal on WhatsApp

WhatsApp

Leave a Reply