Reciter: Nadeem Sarwar

Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana Lyrics In Urdu By Nadeem Sarwar

Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana Lyrics Urdu by Nadeem Sarwar

سب پھولوں کے گھر میں اک سنوری دلہن آئے
تم جیسے ہو بس ویسی ہی پیارے دلہن آئے
سر پہ اگر سہرا سجانا
ہاتھ پہ کنگنا جو بندھانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

سر پہ اگر سہرا سجانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

فاطمہ صغرا نے یہ اکبر کو لکھا ہے
بھائی سلامت رہو بہنا کی دعا ہے
بعد دعا دل میں یہ ارمان بسا ہے
مسند شادی جو بچھانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

سر پہ اگر سہرا سجانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

بھیا کی آغوش میں میں بھی تو پلی ہوں
بھیا تیری انگلی پکڑ کر میں چلی ہوں
کیوں میں تیری چھاؤں سے محروم رہی ہوں
بابا کی جب چھاؤں میں جانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

سر پہ اگر سہرا سجانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

بابا سے کہنا کہ میری جلد خبر لیں
ٹوٹ نہ جائیں کہیں بابا میری سانسیں
کٹتا نہیں دن نہ گزرتی ہیں یہ راتیں
خط میرا بھائی کو سنانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

سر پہ اگر سہرا سجانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

بھیا تیرے بعد جو دن عید کا آیا
عید کے دن عیدی میں غم میں نے ہے پایا
مجھ کو بھرے گھر کی جدائی نے رلایا
دکھ یہ میرا سب کو بتانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

سر پہ اگر سہرا سجانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

سنتی ہوں کربل کی بہت گرم ہوا ہے
اماں سے کہنا کہ یہ صغرا نے کہا ہے
پھول سا اصغر جو میرا ساتھ گیا ہے
دھوپ سے جب اس کو بچانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

سر پہ اگر سہرا سجانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

بہنوں کا دل جان جگر ہوتا ہے بھائی
آنکھیں ٹھہرتی ہیں جدھر ہوتا ہے بھائی
میرے تڑپنے کا اثر ہوتا ہے بھائی
تم ہو جہاں مجھ کو بلانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

سر پہ اگر سہرا سجانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

بھیا مجھے رہتا ہے ہر وقت یہ احساس
بھول گئے کیا مجھے میرے چچا عباس
آئے علم آئے سکینہ ہو میرے پاس
آس میری توڑ نہ جانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

سر پہ اگر سہرا سجانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

اماں سے کہنا کہ سکینہ کی قسم ہے
فاصلہ اب قبر سے بیمار کا کم ہے
دیر نہ کرنا کہ میرے ہونٹوں پہ دم ہے
ہاتھ دعا کو جو اٹھانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

سر پہ اگر سہرا سجانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

ہائے خط صغرا کے آخر میں لکھا تھا
اچھا میرے بھائی خدا کو تمہیں سونپا
سرور و ریحان یہ جملہ بھی عجب تھا
اچھا میری قبر پہ آنا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

سر پہ اگر سہرا سجانا
بھیا مجھے بھول نہ جانا

Sab Phoolon Ky Ghar Mein Aik Sawari Dulhan Aye
Tum Jaisy Ho Bas Wesi Hi Pyari Dulhan Aye
Sar Py Agar Sehra Sajana
Hath Py Kangna Jo Bandhana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Sar Py Agar Sehra Sajana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Fatima Sughra Ny Yeh Akbar Ko Likha Hai
Bhai Salamat Raho Behna Ki Dua Hai
Bad e Dua Dil Mein Yeh Arman Basa Hai
Masnad E Shadi Jo Bichana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Sar Py Agar Sehra Sajana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Baba Ki Aghosh Mein Main Bhi To Pali Hun
Bhaiya Teri Ungli Pakarh Kar Main Chali Hun
Kiun Main Teri Chaon Sy Mehroom Rahi Hun
Baba Ki Jab Chaon Mein Jana
Bhaiya Mujhy Bhool Na Jana

Sar Py Agar Sehra Sajana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Baba Sy Kehna Ky Meri Jald Khabar Len
Toot Na Jayen Kahin Baba Meri Sansen
Kat’ta Nahi Din Na Guzarti Hain Yeh Raten
Khat Mera Baba Ko Sunana
Bhaiya Mujhy Bhool Na Jana

Sar Py Agar Sehra Sajana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Bhaiya Tery Bad Jo Din Eid Ka Aaya
Eid Ky Din Eidi Mein Gham Main Ny Hai Paya
Mujh Ko Bhary Ghar Ki Judai Ny Rulaya
Dukh Yeh Mera Sab Ko Batana
Bhaiya Mujhy Bhool Na Jana

Sar Py Agar Sehra Sajana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Sunti Hun Karbal Ki Bahut Garm Hawa Hai
Amman Sy Kehna Ky Yeh Sughra Ny Kaha Hai
Phool Sa Asghar Jo Mera Sath Gya Hai
Dhoop Sy Jab Us Ko Bachana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Sar Py Agar Sehra Sajana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Behnon Ka Dil Jan E Jigar Hota Hai Bhai
Aankhen Theharti Hain Jidhar Hota Hai Bhai
Mery Tarhapny Ka Asar Hota Hai Bhai
Tum Ho Jahan Mujh Ko Bulana
Bhaiya Mujhy Bhool Na Jana

Sar Py Agar Sehra Sajana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Bhaiya Mujhe Rehta Hai Har Waqt Yeh Ehsas
Bhool Gaye Kya Mujhy Mery Chacha Abbas
Aaye Alam Aaye Sakina Ho Mery Pas
Aas Meri Torh Na Jana
Bhaiya Mujhy Bhool Na Jana

Sar Py Agar Sehra Sajana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Amman Sy Kehna Ky Sakina Ki Qasam Hai
Fasila Ab Qabr Sy Beemar Ka Kam Hai
Dair Na Karna Ky Mery Honton Py Dam Hai
Hath Dua Ko Jo Uthana
Bhaiya Mujhy Bhool Na Jana

Sar Py Agar Sehra Sajana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Haye Khat E Sughra Ky Akhir Mein Likha Tha
Acha Mery Bhai Khuda Ko Tumhen Sonpa
Sarwar O Rehan Yeh Jumla Bhi Ajab Tha
Acha Meri Qabr Py Ana
Bhaiya Mujhy Bhool Na Jana

Sar Py Agar Sehra Sajana
Bhaiya Mujhe Bhool Na Jana

Join Khairilamal on WhatsApp

WhatsApp

This Post Has One Comment

  1. Adil

    Bhaiya Mujhe Bhul Na Jana Hindi mein

Leave a Reply